متفرق

کیلے کے فوائد

How-many-calories-in-a-bananaپھلوں کی افا دیت سے بھلا کون انکار کر سکتا ہے۔ انگریزی کی ایک مشہور کہا وت کا مفہوم یہ ہے کہ اگر کوئی شخص روزانہ ایک سیب کھائے تو اسے معا لج کے پا س جانے کی ضرورت نہیں پڑے گی۔ لیکن اب جو تحقیق ہوئی ہے اس سے ظاہر ہو تاہے کہ کیلا سیب سے بھی زیادہ بہترین پھل ہے۔ جدید تحقیق کے مطابق کیلا توانائی ، حیا تین اور معدنی اجزا کے حصول کا بہترین ذریعہ ہے۔ ننھے منے بچوں کے لیے یہ خصوصی طور پر بہت مفید ہے۔ کیلا زود ہضم ہے اور جسم میں مقویات کی کمی دور کرنے اور وزن گھٹانے میں مدد دیتا ہے۔دن بھر کی تھکن کے بعد اگر دو کیلے اکھٹے کھائے جائیں تو توانائی دو بارہ منتوں میں بحال ہوجا تی ہے۔ طبی ماہرین کے مطابق کیلا انسان کو چست و توانا رکھنے کے ساتھ ساتھ صحت مند بھی بنا تا ہے۔ کیلے میں ریشے بنانے والے اجزا پروٹین ،وٹامنز اور معدنیات کا جو امتزاج پایا جا تا ہے وہ ایک ساتھ بہت کم ہی پھلوں میں ہوتا ہے۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ ایک کیلے میں سو سے زائد کلو ریز پائی جا تی ہیں جو دن بھر کی تھکن دور کر نے کے لئے کافی ہو تی ہیں۔ کیلے کو اگر دودھ کے ساتھ کھا یا جائے تو اس سے اچھی اورصحت مند غذا اور کوئی نہیں۔ طبی ماہرین کے مطابق کیلے پر کی جانیوالی نئی تحقیق میں کہا گیا ہے کہ کیلے میں ایسے نا معلوم ، نایاب اور صحت بخش اجزا ہوتے ہیں جو صرف کیلے کے ہی استعما ل سے حاصل ہو سکتے ہیں۔ جدید تحقیق سے یہ بھی معلو م ہو اہے کہ کیلاکسی حد تک بڑھا پے کا راستہ بھی روکتا ہے اور ذہنی اضمحلا ل دور کر نے میں مدد دیتا ہے۔ درمیا نے کیلے میں 90 حرارے ہو تے ہیں جب کہ پروٹین ، نشاستہ ، ریشہ ، فاسفورس ، فولا د، سوڈیم ، پوٹاشیم اور حیا تین الف، ب اور ج (وٹامن اے، بی اورسی ) اس میں خاصی مقدار میں پائے جاتے ہیں۔ مغربی ممالک میں لو گ عموماً چتری دار کیلا پسند نہیں کر تے اور ایسے کیلے کو ترجیح دیتے ہیں جو پوری طر ح پکا نہ ہو ، لیکن نئی تحقیق بتاتی ہے کہ چتری دار کیلا زیا دہ مفید ہو تا ہے۔ وجہ یہ ہے کہ جب کیلا خو ب پک جاتا ہے۔ تو اس کا زیا دہ نشاستہ شکر میں تبدیل ہو کر اسے مزے دار بھی بنا دیتا ہے اور زود ہضم بھی۔ ماہرین یہ تو پہلے سے ہی تسلیم کرتے رہے ہیں کہ کیلا کھانے سے معدے کی تیزابیت کم ہوتی ہے ، لیکن یہ انکشاف جدید تحقیق سے ہو اکہ کیلا ایسے خلیوں کے نشوونما میں مدد دیتا ہے جو معدے کی اندرونی جھلی کو تیزاب سے محفوظ رکھتے ہیں۔ ماہرین کا خیا ل ہے کہ چو نکہ کیلے میں پو ٹاشیم بھی خو ب ہو تاہے لہذا یہ فشار خون کی زیادتی (ہا ئی بلڈ پریشر ) پر قابو پانے میں مدد دیتا ہے۔ کیلا اسہال میں بھی از حد مفید ہے ۔ جبکہ کیلے کی ایک خصوصیت یہ بھی بتائی جا تی ہے اگر اسے مسل کر اس میں ایک بڑا چمچہ جئی کا آٹا ملا یا جائے اور پھر چہرے پر ملا جائے تو اس سے جلد نکھر جا تی ہے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s