پاکستان کی خواتین سیاستدان / الیکشن

ڈاکٹر نوشین حامد


پاکستان کی خواتین سیاستدان

منصور مہدی

ڈاکٹر نوشین حامدپاکستان تحریک انصاف کی ایک سرگرم خاتون رہنما ہیں، یہ 2013کے انتخابات میں خواتین کی مخصوص نشستوں پر ممبر صوبائی اسمبلی پنجاب منتخب ہوئیں۔ یہ 19 فروری 1961 کو لاہور میں پیدا ہوئیں۔ آپ نے 1986 میں ڈاو¿ میڈیکل کالج کراچی سے بائیو کیمسٹری میں ایم بی بی ایس کی ڈگری امتیازی حیثیت سے حاصل کی۔ایک ڈاکٹر کی حیثیت سے آپ نے 1989 – 90 کے دوران فاطمہ جناح میڈیکل کالج لاہور میں ڈیمانسٹریٹر کے طور پر خدمات انجام دیں اور جنرل سیکرٹری بزنس اینڈ پروفیشنل ویمن آرگنائزیشن فرائض سنبھالے ہوئے ہیں۔ آپ کے سسر میاں معراج الدین 1962تا 1965 میں صوبائی اسمبلی مغربی پاکستان میں رکن رہے ہیں، اس دوران پارلیمانی سیکرٹری برائے بیسک ڈیمو کریسیزاینڈ لوکل گورنمنٹ بھی رہے ہیں۔ 1965سے 1969تک پارلیمانی سیکرٹری برائے سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن اور داخلہ ، محنت و جیل خانہ جات رہے ہیں۔1993سے1996اور 1997سے1999 کے دوران رکن پنجاب اسمبلی رہے ہیں اور وزیر برائے آبکار ی و محصولات فرائض سرانجام دیتے رہے ہیں۔ آپ کے شوہرحامد معراج ڈپٹی مئیر لاہور کے فرائض سرانجام دیتے رہے ہیں۔

ڈاکٹر نوشین حامد سیاسی سرگرمیوں کیساتھ ساتھ سماجی سرگرمیوں میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیتی ہیں ۔

ڈاکٹر نوشین حامد اسمبلی کی کارروائی میں بھی سرگرمی سے حصہ لیتی ہیں، انھوں نے اسمبلی میں متعدد قراردادیں جمع کروائی، جن میں نے ترمیمی ڈرگ ایکٹ کیلئے پنجاب بھر میں میڈیکل سٹورز کی ہڑتال کے حوالے سے تحریک التوا جمع کروائی۔مفکر پاکستان حضرت ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کے یوم پیدائش کی مناسبت قومی چھٹی دینے کی قرارداد بھی پیش کی۔ جس میں مطالبہ کیا گیا کہ حکومت نے شاعر مشرق کے کلام کو نہ صرف تعلیمی نصاب سے نکال دیا ہے‘ بلکہ ان کی پیدائش پر ہونے والی تعطیل کو بھی ختم کردیا ہے جسے فی الفور بحال کیا جائے۔ انھوں نے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے ایران کی جانب سے ثالثی کا کردار ادا کرنے کے حق میں بھی قرارداد جمع کروائی۔

ان کا کہنا ہے کہ شعبہ صحت میں اصلاحات لانے کے حکومتی دعوے جھوٹ ثابت ہو چکے ہیں ، شعبہ صحت زبوں حالی کا شکار ہے ،پنجاب کے سرکاری ہسپتالوں کی حالت انتہائی خراب ہے جبکہ ان ہسپتالوں میں نئی مشینری نصب کرنے کے اعلانات بھی حقیقت نہیں بن سکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ کرپشن ملک کو دیمک کی طرح چاٹ رہی ہے۔ ملک کو کرپٹ حکمرانوں سے نجات دلانا بہت ضروری ہے۔ تحریک انصاف کی کرپشن کے خلاف تحریک سے عوام میں نیاشعور آیا ہے، وہ اب آئندہ عام انتخاب میں بد عنوان عناصر کو ووٹ نہیں دیں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف ملک کی واحد جماعت ہے جس نے شفاف انتخاب کا مطالبہ کیا ہے۔جب تک شفاف انتخاب کا انعقاد نہیں ہوگا ملک میں مضبوط جمہوری نظام قائم نہیں ہوسکتا۔ ظالمانہ ٹیکسوں کا شکار تاجر، لوڈشیڈنگ سے تنگ مزدور ،بیروزگاری سے پریشان نوجوان ،اغواءکی وارداتوں اورپولیس مظالم کا شکار پہلے ہی حکومت کے خلاف احتجاج کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہمارے احتجاج کا مقصد بد عنوان حکمرانوں کو احتساب ہے جب حکمرانوں کو احتساب ہوگا تو دوسرے کسی شعبہ سے وابستہ افراد کو کرپشن کرنے کی جرآت نہیں ہوگی۔
ڈاکٹر نوشین حامد وقتاً فوقتاً فری میڈیکل کیمپس کا بھی انعقاد کرتی رہتی ہیں۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s