پاکستان کی خواتین سیاستدان / الیکشن

سیدہ شہلا رضا


پاکستان کی خواتین سیاستدان

 

منصور مہدی
سیدہ شہلا رضا پاکستان پیپلز پارٹی کی ایکپرانی کارکن ہیں۔ یہ 2008میں پہلی بار ڈپٹی سپیکر سندھ اسمبلی مقرر ہوئیں، 2013 وہ دوسری بارسندھ اسمبلی کی ڈپٹی اسپیکر مقرر ہوئیں۔ یہ 15مئی 1964کو کراچی میں پیدا ہوئیں۔ انھوں نے گرایجویشن یونیورسٹی آف کراچی سے کیا۔ 1991میں فزیالوجی میں ماسٹر ڈگری کیا۔

انھوں نے سیاسی زندگی کا آغاز1985میں کیا جب وہ یونیورسٹی میں زیر تعلیم تھیں۔ انھوں نے ضیا الحق کے دور حکومت میں پیپلز سٹوڈنٹس فیڈریشن میں شمولیت اختیار کی اورپیپلز سٹوڈنٹس فیڈریشن کی جائینٹ سیکرٹری منتخب ہو ئیں۔
1990 میں جام صادق علی کے دور حکومت میں انہیں دوہرے قتل اور غیر قانونی اسلحہ رکھنے کے ایک مقدمے میں گرفتار کیا گیا۔ انہیں کئی ہفتوں تک سی آئی اے سینٹر کراچی میں رکھا گیا جہاں مبینہ طور پر انہیں سخت تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ وہ حراست میں تھیں جب انہوں نے کراچی سینٹرل جیل سے ایم ایس سی فزیالوجی کا امتحان دیا۔

شہلا رضا کا تعلق کراچی کے متوسط طبقے سے ہے۔ اس وقت بھی وہ دو کمروں کے ایک فلیٹ میں رہتی ہیں۔2014 میں انہیں پیپلز پارٹی شعبہ خواتین کراچی ڈویڑن کا سیکرٹری مقرر کیا گیا تھا۔ ان کی نامزدگی پیپلز پارٹی کی جانب سے خواتین کو ایوان میں موثر نمائندگی دینے اور ان کے شہری پس منظر کی وجہ سے کی گئی ہے۔

1991میں انھوں نے ایک سیاسی شخصیت غلام قادر سے شادی کی، 1992میں ان کے ہاں ایک بیٹی اور 1994میں ایک بیٹا پیدا ہوا۔ 2005میں ایک سڑک کے حادثے میں ان کے دونوں بچے ہلاک ہوگئے تھے۔ اس حادثے میں وہ اور ان کے شوہر بھی زخمی ہوئے تھے۔

چند ماہ قبل ہی شہلا رضا کو دھمکی آمیز خط بھی موصول ہوئے ہیں، جن میں پچاس کروڑ روپے طلب کیے گئے ہیں جب کہ رقم نہ ملنے پر انھیں قتل اور سندھ اسمبلی کی بلڈنگ کو اڑانے کی بھی دھمکی دی گئی ہے۔

اس سے قبل بھی ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی کو کالعدم تنظیموں کی جانب سے دھمکی آمیز خط موصول ہوا تھا جس میں ان کی گاڑی کو نشانہ بنانے کی دھمکی دی گئی تھی۔

Advertisements

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s