ثقافتی اتحاد کا عالمی دن


منصور مہدی
آج ثقافتی اتحاد کا عالمی دن منایا جا رہا ہے۔ یہ دن ابتدا میں بھارت، سری لنکا، مالدیپ، بنگلہ دیش اور نیپال میں منایا جاتا تھا۔ لیکن 2007سے یہ دنیا کے بیشتر ممالک میں منایا جاتا ہے۔ جنوبی ایشیاءکے ممالک میں چونکہ ہر نسل اور ہر مذہب کے لوگ آباد ہیں ۔ جن کے نسلی اور مذہبی روایات اور طور طریقے اپنے اپنے ہیں لیکن ایک ہی خطے میں رہنے کی وجہ سے علاقائی رسمیں اور ثقافت میں یکانگی پائی جاتی ہیں چنانچہ اس خطے میں میں بسنے والوں میں اتحاد قائم رکھنے کے لیے ثقافت کو اتحاد کی علامت قرار دیا۔دوسرے اس دن کے منانے کا مقصد اس خطے کی ثقافت کو فروغ دینا اور دیگر خطوں کی ثقافتی یلغار سے محفوظ رکھنا ہے۔ ثقافت کسی بھی معاشرے کے پیکر میں روح اور جان کا درجہ رکھتی ہے۔ قوموں پر تسلط اور غلبے کے لئے اغیار اپنی تہذیب و ثقافت کی ترویج کی کوشش کرتے ہیں جو کوئی نیا طریقہ نہیں ہے بلکہ بہت پہلے سے یہ طریقہ چلا آ رہا ہے۔ البتہ پچھلے سو دو سو برسوں سے مغربی ممالک نے جدید وسائل کے استعمال سے اپنی ثقافت کو دوسرے ممالک میں متعارف کروانا شروع کیا ہوا ہے جس سے پچنے کے لیے علاقائی ثقافت کو فروغ دینا اور اس عمل میں خطے کی تمام اقوام کو شامل کرنا ہے اس دن کا بنیادی مقصد ہے۔دنیا کی تمام بیدار قومیں اس بات پر متفق ہیں کہ اگر کسی قوم نے اپنی ثقافت کو بیگانہ ثقافتوں کی یلغار کا نشانہ بننے دیا تو تباہی اس قوم کا مقدر بن جاتی ہے اور غلبہ اسی قوم کو حاصل ہوتا ہے جس کی ثقافت غالب آ جاتی ہے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s