انسداد منشیات کا دن


منصور مہدی
آج انسداد منشیات کا عالمی دن ہے۔ دنیا بھر کے معاشروں میں برھتی ہوئے منشیات نوشی پر7دسمبر1987کو اقوام متحدہ نے اس دن کو ہر سال 26جون کو منانے کا فیصلہ کیا۔ اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں 25کروڑ سے زائد افراد مختلف اقسام کی منشیات استعمال کر رہے ہیں۔جبکہ ہر سال ان کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے ۔نوجوان مردوں کے علاوہ اب خواتین کی تعداد میں بھی اضافہ ہو رہا ہے۔ محکمہ صحت پاکستان کے اعداد وشمار کے مطابق پاکستان میں بھی 90لاکھ سے زائد افراد منشیات کا استعمال کرتے ہیں ۔جن میں 22 فیصد دیہاتی آبادی اور 38 فیصد شہری آبادی شامل ہے۔ ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں ہر سال سگریٹ اور شراب کے علاوہ صرف منشیات ( چرس، افیون ، ہیروئن وغیرہ) پر 40 ارب روپے خرچ کیے جاتے ہیں۔ پاکستان میں نشہ کرنے والوں میں زیادہ تر 14 سے 25 سال کے نوجوان ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق تقریباً 0 2لاکھ افراد ہیروئن اور 50 ہزار افیون کے نشے کے عادی ہیں۔ نشہ آور اور سکون آور ٹرانکولائزر گولیاں استعمال کرنے والے افراد کی تعداد 9 لاکھ کے قریب ہے۔جبکہ چرس پینے والوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔عالمی ادارہ صحت کے مطابق دنیا بھر میں ہر سال35 لاکھ سے زائد افرادمنشیات کے استعمال کی وجہ سے ہلاک ہوجاتے ہیں۔
طبی و نفسیاتی ماہرین کا کہنا ہے کہ نئی نسل میں نشہ آور اشیا کے استعمال کا رجحان درحقیقت دولت کی انتہائی فراوانی یا انتہائی غربت، دوستوں کی بری صحبت، جنس مخالف کی بے وفائی، اپنے مقاصد میں ناکامی ،حالات کی بے چینی اور مایوسی، والدین کی بچوں کی طرف سے بے اعتناہی،معاشرتی عدم مساوات ناانصافی، والدین کے گھریلو تنازعات بھی نشہ کے آغاز کے اسباب ہوسکتے ہیں۔ اس دن کے منانے کا مقصد بھی یہی ہے کہ ایسے اسباب کو دور کیا جائے یا انھیں کم کیا جائے تاکہ نئی نسل منشیات کی لعنت سے بچ سکے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s