مزدوروں کا عالمی دن


منصور مہدی
آج یکم مئی کو مزدوروں کا عالمی دن ہے۔ اس موقع پر نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں مختلف تقریبات، سیمینارزکانفرنسز اور ریلیوں کا انعقاد ہو رہا ہے۔جن میں شکاگو کے محنت کشوں کے ساتھ اظہار یکجہتی سمیت مزدوروں، محنت کشوں کے مسائل کو اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ مسائل کے حل کا مطالبہ اور محنت کشوں کو ان کے حقوق کی فراہمی کے لئے آواز اٹھائی جا رہی ہے۔اس موقع پر صوبائی دارلحکومت لاہور سمیت پنجاب کے تمام چھوٹے بڑے شہروں میں پاکستان لیبر فیڈریشن، پاکستان ورکرز یونین، لیبر قومی موومنٹ ، پیپلز لیبر بیورو اور دیگر تنظیموں کے زیر اہتمام ریلیاں نکل رہی ہیں جن میں مزدوروں کے علاوہ سول سوسائٹی اور دیگر طبقہ فکر کے نمائندے بھی شریک ہیں۔
یہ دن 1886میں شکاگو کے مقام پر مزدوروں کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہونے والے احتجاج کا نتیجہ ہے۔ مزدوروں نے اجرت، میڈیکل اور کام کا دورانیہ 8گھنٹے کرنے کا مطالبہ کیا تھا جس کی وجہ سے اس آواز کو دبانے کے لیے ان مظلوموں ، محکوموں اور مجبوروں کو بے پناہ مشکلات سہنی پڑیں۔
مزدوروں کے عالمی دن کے موقع پر جہاں مزدوروں کے استحصال کا سلسلہ بند کرنے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے وہاں پوری دنیا میں مہنگائی، اَشیائے خوراک کی بڑھتی ہوئی قیمتوں اور غربت کے خلاف بھی احتجاج کیا جا رہا ہے۔مزدور رہنماوں کا کہناہے کہ موجودہ دورمیں بھی مزدوروں کے اوقات کار اور کم از کم اجرت کے حکومتی اعلان پرعمل نہیں کیاجارہاہے۔ موجودہ دورمیں مزدور کوناصرف بیروزگاری، غربت اور مہنگائی کا سامنا ہے بلکہ گیس اور بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے ہزاروں صنعتیں بند اور لاکھوں محنت کش بے روزگار ہو گئے ہیں۔مزدور رہنماوں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے کم از کم اجرت سات ہزار روپے مقرر تو کی گئی ہے لیکن اس پر مکمل عمل درآمد نہیں کیا جا رہا۔نجی شعبے میں محنت کش اب بھی تین چار ہزار روپے تک ماہانہ پرملازمت کرنے پرمجبور ہیں جبکہ صحت یاسوشل سیکورٹی تو انھیں بالکل میسر نہیں۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s