اقوام متحدہ کے امن مشن


منصور مہدی
آج اقوام متحدہ کے زیراہتمام امن مشن میں حصہ لینے والوں کا عالمی دن ہے۔ یہ دن 1948سے ہر سال 29مئی کو اقوام متحدہ کے زیر اہتمام منایا جاتا ہے۔ یہ دن اصل میں اقوام متحدہ کے دنیا کے مختلف حصوں میں امن و امان بحال کرنے والی عالمی امن فوج کے 1,20,000جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرنا ہے جو اپنے گھروں اور ملکوں سے دور جا کر دنیا میں امن کی کوششوں میں عملاً حصہ لے رہے ہیں ۔ان عالمی مشنوں میں نہ صرف فوج، بلکہ پولیس اور سول محکموں کے افسران اور جوان بھی حصہ لیتے ہیں۔ اس وقت دنیا کے چار براعظموں کے مختلف ممالک میں اقوام متحدہ کے ایسے ہی 17عالمی امن مشن کام کر رہے ہیںجن میں نیلے ہیلمٹ والے یہ فوجی ڈیوٹی کے دوران نہ صرف زخمی ہوجاتے ہیں بلکہ اب تک 3000سے زائد جوان اپنی جانیں بھی قربان کر چکے ہیں۔ گذشتہ برس 2011میں نیلے ہیلمٹ والے 112جوان جن میں خواتین بھی شامل تھی نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ اقوام متحدہ کے مشن براعظم افریقہ کے ممالک جنوبی سوڈان، اوبائے ( شمالی سوڈان)، کانگو، ڈارفر، آئیوری،لائبیریا اور مغربی صحارا ، براعظم امریکہ میں ہیٹائی، براعظم ایشیاءمیں تیمور، افغانستان اور پاک بھارت آزاد کشمیر کی سرحد، یورپ میں سائپرس اور کوسوو جبکہ مڈل ایسٹ میں شام اور لبنان میں کام کر رہے ہیں۔ ان کے علاوہ دیگرمشن انگولا، روانڈا، ایتھوپیا، ایرٹیریا، سری لیون، سنٹرل افریقن ریپبلک، چاڈ، لائیبریا، برونڈی، موزمبیق، صومالیہ ون اور صومالیہ ٹو، ڈومینیکن، ہیٹائی، سلواڈور، کمبوڈیا، افغانستان، پاکستان،تاجکستان، مشرقی تیمور،نیو گنی،کروشیا،جارجیا ، سیرینام ، یمن اور گوئٹے مالا میں ہیں۔ پاکستان 1960سے اقوام متحدہ کے امن مشنوں میں باقاعدگی سے حصہ لے رہا ہے۔اقوام متحدہ کے امن مشنوں میں10,513جوانوں کی شمولیت کے ساتھ اس وقت پاکستان اقوام متحدہ کی امن فوج کو افرادی قوت مہیا کرنے والا پہلا بڑا ملک ہے۔ اس وقت پاکستان کے تقریباً 250جوان ہٹائی، 175کوسوو، 3,590کانگو، 3,419لائبریا، 1,580سوڈان، 1,304آئیوری کاسٹ اور195مشرقی تیمور میں امن مشن سرانجام دے رہے ہیں۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ Log Out / تبدیل کریں )

Connecting to %s